پارک گیئون ہائے


پارک گیئون ہائے (انگریزی: Park Geun-hye) جنوبی کوریا دی گیارہویں صدر۔ [1]

پارک گیئون ہائے
박근혜
Geun Hye Park.jpg

جنوبی کوریا دی گیارہویں صدر
منصب اتے
25 فروری 2013 – 10 مارچ 2017
Powers and duties suspended
9 دسمبر 2016 – 10 مارچ 2017
وزیرِ اعظم چونگ ہانگ ون
لی وان کُو
چوئی کیوئونگ ہَوَن (برسر عہدہ )
ہوانگ کیو اَہن
پیشرو لی مِیُونگ بَک

سُنَوْری پارٹی دی قائد
منصب اتے
17 دسمبر 2011ء – 15 مئی 2012ء

رکن : قومی اسمبلی
منصب اتے
30 مئی 2012 – 10 دسمبر 2012
چون حلقہ متناسب نمائندگی
منصب اتے
3 اپریل 1998 – 29 مئی 2012

جنوبی کوریا دی خاتون اول، برسرعہدہ
منصب اتے
16 اگست 1974 – 26 اکتوبر 1979
صدر پارک چُونگ ہی

جم (1952-02-02) 2 فروری 1952 (age 65)
ڈیگو، جنوبی کوریا
سیاسی جماعت سنوری پارٹی
سکونت بلو ہاؤز
مادر علمی سیگنگ یونیورسٹی
دستخط

حصے

مڈھلا جیونلکھو

پارک دی پیدائش 2 فروری، 1952ء نوں ڈونگ آف جنگ -گو ٹےگو، جنوبی کوریا وچ ہوئی سی۔ انہاں دے والد پارک چونگ ہی، جنوبی کوریا دے تیسرے صدر (1963ء سے 1979ء تک) سن۔

اوہ اپنے والد دی پہلی اولاد نیں تے غیر شادی شدہ نیں۔

تعلیملکھو

سال 1953ء وچ پارک دا خاندان سیول وچ جا کے رہن لگا، اوتھے ای پارک نے سال 1970ء وچ ہائی اسکول دا امتحان پاس کیتا۔ سال 1974ء وچ پارک نے سوگانگ یونیورسٹی توں الكٹرونك انجینئرنگ وچ گریجویشن ڈگری حاصل کیتی۔ اس دے بعد پارک نے ہور تعلیم لئی فرانس دی گرینوبل یونیورسٹی وچ داخلہ لیا. نیشنل تھیٹر آف کوریا وج ماں دے قتل دے بعد پارک فرانس چھڈ کے سیول آ گئی۔ اسدی ماں دا قتل جاپان وچ پیدا ہوئے کوریائی مونسے گوانگ نے کیتا جو شمالی کوریا نال ہمدردی رکھدا سی تے جاپان وچ کوریا دے باشندےآں دی جنرل ایسوسی ایشن دا رکن سی۔

15 اگست 1974ء سے 26 اکتوبر 1979ء تک پارک کو خاتون اول ہونے کا اعزاز حاصل رہا. واضح رہے ہو کہ 26 اکتوبر 1979ء کو پارک کے والد کا خاندان سیول میں جا کر رہنے لگا، وہیں پر پارک نے سال ہائی اسکول کا امتحان پاس کیا. سال 1974ء میں پارک نے سوگانگ یونیورسٹی سے الكٹرونك انجینئرنگ میں گریجویشن ڈگری انعقاد کی. اس کے بعد پارک نے مزید تعلیم کے لئے فرانس کے گرینوبل یونیورسٹی میں داخلہ لیا. نیشنل تھیٹر آف کوریا میں ماں کے قتل کے بعد پارک نے فرانس چھوڑ کر سول آ گئی. ان ماں کے قتل جاپان میں پیدا ہوئے کوریا مون سے -گواگ نے کی جس میں شمالی کوریا سے ہمدردی رکھتا تھا اور جاپان میں کوریا کے باشندوں کے جنرل ایسوسی ایشن کا رکن تھا.

15 اگست 1974 سے 26 اکتوبر 1979 تک پارک خاتون ہونے کا اعزاز حاصل رہا۔ واضح رہے ہو کہ 26 اکتوبر 1979 کو پارک کے والد کا قتل کیا گیا تھا۔

اعزازی ڈاکٹر کی ڈگریاںلکھو

  • 1987ء: چینی ثقافتی جامعہ، تائیوان
  • 2008ء: پُكيوگ نیشنل یونیورسٹی، سائنس اور ٹیکنالوجی کا کوریا ا میں علی درجے انسٹی ٹیوٹ (KAIST)، جنوبی کوریا
  • 2010ء: سوگانگ یونیورسٹی جنوبی کوریا
  • 2014ء: ٹیکنالوجی یونیورسٹی ڈریسڈن، جرمنی

سیاسی زندگیلکھو

  • 1998ء: میں اسمبلی کے ضمنی انتخابات میں دلسینگ، ڈایگو علاقے سے گرینڈ نیشنل پارٹی سے امیدوار بن کر انتخابات جيت سكی۔ اس کے بعد پارک نے اسی حلقہ سے تين بار انتخابات جیتا اور اپریل 2012ء تک علاقے کی نمائندگی کی. وہ اپریل 2012 کے انتخابات میں متناسب نمائندے کے طور پر منتخب ہوئیں.
  • 2011ء: 19 دسمبر 2011 کو سینري پارٹی کی صدر منتخب ہوئیں.
  • 2013ء: 25 فروری 2013 کو پارک جنوبی کوریا کی صدر بنیں.

دنیا دیاں طاقتور عورتاںلکھو

  • 2013ء: فوربس میں دی گئی دنیا کی بہترین طاقتور خواتین کی فہرست میں پارک کا 11 واں مقام۔ [2]
  • 2014ء: فوربس میں دی گئی دنیا کی بہترین طاقتور خواتین کی فہرست میں میں پارک کا 11 واں مقام۔ [3]

بھارت دا دورہلکھو

16 جون 2014ء کو پارک چار دنوں کے بھارت کے دورے پر آئیں اور یہاں پر اس وقت کے وزیر اعظم منموہن سنگھ، اپوزیشن کی لیڈر سشما سوراج وغیرہ رہنماؤں سے ملاقات کی۔ اس سے پہلے نئی دہلی میں مہاتما گاندھی کی سمادھی پر چادر عقیدت پیش کی. [4]

سیاسی جدوجہدلکھو

کوریا سپریم کورٹ کے استغاثہ نے چوئی اور صدر کے دو ساتھیوں پر مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث ہونے کا الزام لگایا۔ اسکینڈل کے الزامات کے بعد نومبر کے پہلے ہفتے سے صدر کے خلاف سیریز کارروائی شروع ہوئی ۔ پہلی بار کسی برسرخدمت صدر سے پوچھ گچھ کی جائے گی.

29 نومبر 2016 کو پارک نے صدر کے عہدے سے استعفا دے کر اپوزیشن کو اقتدار منتقل کرنے کے لئے اپوزیشن کو مدعو کیا لیکن اپوزیشن نے اقتدار قبول نہ کرکے پارک کے خلاف مواخذہ چلا کر ہٹانے کرنے کی تجویز پیش کی۔ 9 دسمبر 2016ء کومواخذے پر ووٹ ہوا، جس کے بعد ان کی صدارتی حیثیت معلق ہو چکی ہے۔

حوالےلکھو